نمازوں کو ہی پڑھنے میں ، نمازی دیر کرتے ہیں

نمازی دیر کرتے ہیں قاضی دیر کرتے ہیں

نمازوں کو ہی پڑھنے میں ، نمازی دیر کرتے ہیں

 تبھی انصاف کرنے میں بھی قاضی دیر کرتے ہیں

                **********                

سمجھ آتا نہیں مجھ کو یہ کیسے حال میں ہیں ہم

سبھی قرآن کو پڑھنے میں کافی دیر کرتے ہیں

                 **********                  

گناہوں میں ہی ڈوبے ہیں یہاں ہم سب ابھی لیکن

خدا سے مانگنے کو ہم تو معافی دیر کرتے ہیں

                 **********                  

فرشتے رزق لاتے ہیں فجر میں اٹھنے والوں کا

مگر اٹھنے کو ہم تو صبح میں ہی دیر کرتے ہیں

                  **********                   

وہ اپنے ہاتھ پھیلاتے ہیں انسانوں کے آگے ہی

مگر اللہ سے لینے میں سوالی دیر کرتے ہیں

                  **********                 

جو چاہیں ہم دعا سے مل ہی جاتا ہے ہمیں طاؔلب!

مگر ہم مانگنے رب سے دعا بھی دیر کرتے ہیں

**********




ایک تبصرہ شائع کریں

جدید تر اس سے پرانی