والدین کی شان بزبان قرآن

 قرآن کی نگاہ میں ماں باپ کا مقام 


قرآن حکیم نے تقریبا پندرہ سے زائد  مقامات پر بڑے ہی حکیمانہ انداز میں والدین ساتھ نیکی، حسن سلوک اور خوش معاملگی کا درس دیا ہے۔ اور اس اہتمام کے ساتھ کہ بیشتر جگہوں پریہ درس درس توحید کے ساتھ ہی آیا ہے ، خدائے پاک کی اطاعت کے ساتھ ساتھ والدین کی اطاعت کا فرمان صادر کیا ہے اور خدائے پاک کے شکر کے ساتھ والدین شکر بجالانے کی تاکید کی ہے ۔ سورہ بقرہ میں فرمایا گیا ۔

 

قرآن کی نگاہ میں ماں باپ کا مقام


 اور اس وقت کو یاد کرو جب ہم نے بنی اسرائیل سے عہد لیا کہ اللہ کے سوا کسی کونہ پو جو ، اور ماں باپ کے ساتھ بھلائی کرو۔ 

القرآن

 اس آیت مبارکہ میں خدا پرستی کے بعد ہی ماں باپ کے ساتھ بھلائی کی تعلیم دی گئی ہے

اور اس تعلیم کو سورة النساء میں ان الفاظ میں دہرایا گیا ۔


  اوراللہ کی بندگی کرو ۔ اور کسی کو اس کا شریک نہ ٹھراؤ ، اور ماں باپ کے ساتھ اچھا سلوک کرو ۔

القرآن

کفار کو جن حرام کاموں سے روکا گیا ان میں شرک باللہ کے بعد ماں باپ کے ساتھ بد سلو کی کو ہی شمار کیا گیا کہ یہ دونوں واقع میں حرام کاموں اسا س ہیں


اے رسول آپ (کفار سے) فرما دیجئے کہ تم پر تمہارے رب نے جو کچھ حرام فرمایا ہے آؤ میں پڑھ کر سنادوں ۔ یہ کہ اس کے . ساتھ کوئی شریک نہ بناؤ اور ماں باپ کے ساتھ حسن سلوک سے پیش آؤ ۔

القرآن

 سورہ بنی اسرائیل میں فرمایا گیا

اور تمہارے رب کا حکم ہے کہ اس کے سوا کسی کو نہ پوجو اور ماں باپ کے ساتھ اچھا سلوک کررن

القرآن                                                                              

سورہ لقمان میں اللہ تعالی نے ماں باپ کی احسان شناسی وشکر گزاری کی تاکید ان الفاظ میں فرمائی۔

میرا اور اپنے ماں باپ کا شکر بجا لاؤ آخر میرے ہی پاس آنا ہے۔

القرآن

ان آیات مبارکہ میں جس اہتمام کے ساتھ  ادب و محبت، خدمت و اطاعت اور احسان پزیری وشکر گزاری کا اولاد کو حکم دیا گیا ہے  اس سے بخوبی اندازہ لگایا جا سکتا ہے اللہ رب العالمیں کی بارگاہ میں دنیا کے انسانی رشتوں میں ماں باپ کا مقام کتنا اونچا اور کس قدر بلند ہے


خدا کے بعد بھیجو شکر تم ماں باپ کا لوگوں 

زباں سے اف نہ کرنا لاکھ ہو ان سے گلہ لوگو




ایک تبصرہ شائع کریں

جدید تر اس سے پرانی